راولپنڈی کے اسپتالوں میں آکسیجن ختم، شیرخوار بچے رل گئے۔

راولپنڈی (عدنان مختار)   پنجاب حکومت کی جانب سے صحت کیلئے کئے جانے والے اقدامات کے بلندو بانگ دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ، ہیلتھ ایمرجنسی کے بلند و بانگ دعوے کئے گئے مگر عملی طور پر کوئی انتظامات نظرنہیں آ رہے۔ راولپنڈی کے الائیڈ اسپتالوں بینظیراسپتال ، ہولی فیملی اور ڈی ایچ کیو میں آکسیجن ختم ہو گئی۔سخت سردی اور بیماری کے باعث شیرخوار بچے ماوں کے سامنے تڑپتے رہے مگر حکام نے خبر تک نہ لی ۔

ہسپتالوں میں بیڈز کم ہونے کے باعث ایک ایک بیڈ پر چار سے پانچ مریض بچے موجود ہیں جس کے باعث علاج کی غرض سے دور دراز سے آئے شہریوں خصوصا خواتین کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

اسپتال زرائع کے مطابق ایک ہفتے کے دوران بیس سے زائد بے ہوش ہوئے مگر پنجاب حکومت کے کان پر تا حال جوں تک نہ رینگی۔ویڈیو آپ بھی دیکھئے

مزید دیکھیں

متعلقہ مضامین