عمران خان جھوٹا ہے نا اہل قرار دیا جائے، سپریم کورٹ میں ن لیگ کی نظرثانی اپیل دائر

پاکستان مسلم لیگ نواز نے عمران خان نااہلی کیس فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں نظرثانی اپیل دائر کر دی،درخواست گزار حنیف عباسی نے نظرثانی درخواست میں عمران خان کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ عمران خان آرٹیکل 62 ون ایف پر پورا نہیں اترتے،انہیں صادق و امین قرار دینے کا فیصلہ درست نہیں جس پر نظر ثانی کی جائے۔ حنیف عباسی نے درخواست میں موقف اپنایا کہ عمران خان نے عدالت کے روبرو جھوٹ بولا، بنی گالہ میں اپنی اہلیہ کے نام بےنامی جائیداد خریدی اورجمائمہ سے لیاگیا قرض کاغذات نامزدگی میں ظاہر نہیں کیا،عمران خان نے آف شور کمپنی کو بھی کاغذات نامزدگی میں ظاہر نہیں کیا جبکہ عدالت میں کمپنی اور اسکے اکاونٹ میں موجود رقم کے حوالے سے مسلسل موقف بدلتے رہے۔

درخواست میں کہا گیا کہ عمران خان نے پارٹی فنڈنگ کے حوالے سے جھوٹے سرٹیفیکیٹس عدالت میں جمع کروائے، ایسے ثبوت اور شواہد عدالت کے سامنے رکھے جن کی کوئی قانونی حیثیت نہیں تھی،لہذا سپریم کورٹ عمران خان کو صادق و امین قرار دینے کے فیصلے پر نظرثانی کرتے ہوئے انہیں نا اہل قرار دے۔ درخواست میںعدالت سے استدعا کی گئی کہ الیکشن کمیشن کو پی ٹی ائی کے 5 سال کے اکاونٹ چیک کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے وفاقی حکومت کو پی ٹی آئی کے خلاف فارن فنڈنگ کی تحقیقات کا حکم دیا جائے۔

مزید دیکھیں

متعلقہ مضامین