آرمی چیف اور چیف جسٹس نے زینب کے بوڑھے والدین کی فریاد سن لی

قصور میں ننھی زینب کے قتل نے ملک کے بڑے اداروں کو ہلا کر رکھ دیا۔ننھی پری کے والدین کی فریاد میڈیا پر گونجی تو آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے واقعے کا فوری نوٹس لے لیا،ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے ٹویٹر پیغام کے ذریعے بتایا کہ آرمی چیف نے قصور میں معصوم بچی زینب کے قتل کے واقع کی شدید مذمت کرتے ہوئے ملزم کی گرفتاری کے لئے عسکری حکام کو سول انتظامیہ کے ساتھ مکمل تعاون کی ہدایت کی ہے۔آرمی چیف نے والدین کی جانب سے انصاف فراہم کرنے کی اپیل پرمتعلقہ عسکری حکام کو ہدایت کی ہے کہ والدین کے ساتھ بھرپور تعاون کرتے ہوئے انصاف کے تقاضے پورے کئے جائیں

دوسری جانب چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے بھی واقعے کا از خود نوٹس لے لیا۔ عدل کے سب سے بڑے ایوان سپریم کورٹ سے جاری اعلامیہ کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب سے 24گھنٹوں میںرپورٹ طلب کر لی،اعلامیہ میں لکھا گیا کہ میڈیا رپورٹس کے مطابق 8سالہ زینب کو 5روز قبل اغواءکیا گیا تھا،جس کی لاش گندگی کے ڈھیر سے ملی ہے ۔ واقعے کے اصل محرکات جاننے کے لئے آئی جی پنجاب سے رپورٹ فراہم کرنے کا کہا گیا ہے۔

اس سے قبل ننھی زینب کے والدین عمرہ کی ادائیگی کے بعد پاکستان پہنچے تو غم سے نڈھال والدین نے انصاف کے حصول کے لئے آرمی چیف سے اپیل کی تھی

مزید دیکھیں

متعلقہ مضامین