بھارتی دہشت گرد کی زبان پر پاکستان کی تعریفیں اپنے ملک سے ناراض

پاکستان نے بھارتی دہشت گرد کلبھوشن یادو کی نئی ویڈیو جاری کر دی ،کلبھوشن یادو اپنی ماں اور بیوی سے ملاقات کے بعد انتہائی ہشاش بشاش دکھائی دیا مگر اپنی بیوی اور ماں کے ساتھ پاکستان آمد کے موقع پر بھارتی سفیر کے رویے پر ناراض دکھائی دیا، اپنے ویڈیو بیان میں کلبھوشن نے کہا میری ماںاور بیوی سے میری ملاقات کروانا حکومت پاکستان کا بہترین اقدام تھا، ملاقات کی اجازت دینے پر حکومت پاکستان کا شکر گزار ہوں ، میری ماں میری اچھی حالت اور جسمانی صحت دیکھ کر بہت خوش ہوئی میں نے انہیں بتایا کہ میری خوراک بہت اچھی ہے اور یہ سب میرا بہت خیال رکھتے ہیں۔

لیکن یہاں میں بھارتی عوام بھارتی حکومت اور نیوی میں موجود لوگوں سے بہت اہم بات کرنا چاہتا ہوں کہ میرا کمیشن ختم نہیں ہوا ، میں ابھی بھی انڈین نیوی کا کمیشنڈ آفیسر ہوں اس کے باوجود میری ماں اور میری بیوی کو پاکستان آنے سے پہلے سختی کے ساتھ ہدایات دی گئیں میں نے اپنی ماں اور بیوی کی آنکھوں میں خوف دیکھا وہ خوف زدہ کیوں تھیں ؟کلبھوشن نے کہا کہ میری ماں اور بیوی کی آنکھوں میں خوف نہیں ہونا چاہئے تھاان کو آنے سے پہلے دھمکایا گیا تھا۔میری ماں کے ساتھ آنے والا بھارتی سفارتکاران پر چیخ رہا تھا،کیا میری فیملی کو ڈرا کر یہاں تک لایا گیا تھا؟

کلبھوشن نے جذباتی انداز میں کہا کہ تسلیم کرتا ہوں کہ میں اپنی شناخت چھپا کر کام کر رہا تھا ابھی بھی کہتا ہوں کہ میں بھارتی خفیہ ایجنسی راءکے لئے کام کر رہا تھا میں ایک فوجی ہوں مگر میری بیوی اور ماں کو خوف اور تکلیف کی حالت میں لایا گیا ، ایسے لگ رہا تھا جیسے انہیںجہاز میں مار پیٹ کر پاکستان تک لایا گیا اور یہ سب ایسے نہیں ہونا چاہئے تھا میری فیملی کو بہت خوش ہونا چاہئے تھا مگر میری ماں صدمے کی حالت میں تھی ۔

کلبھوشن نے کہا کہ ماں سے ملاقات کروانے پر بھارتی اور پاکستانی دونوں حکومتوں کا شکر گزار ہوں لیکن مجھے افسوس ہوا میری ماں بہت ڈری ہوئی اور دھمکائی ہوئی حالت میں تھی ۔

مزید دیکھیں

متعلقہ مضامین