سازشیں نہ رکیں تو 4سال کے حقائق عوام کے سامنے رکھ دوں گا

سابق نا اہل وزیر اعظم نواز شریف نے مختصر مگر ہنگامہ خیز پریس کانفرنس میں نیا سیاسی پنڈورا باکس کھولنے کی وارننگ دے دی، پنجاب ہاوس اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ یہ سال انتخابات کا سال ہے، دھرنے والوں کے تھپکی دے کر قوم پر مسلط کرنے کے منصوبے نہ بنائیں،کسی لاڈلے کو غیر قانونی اور غیر آئینی راستہ فراہم نہ کیا جائے، خفیہ راستوں اور ٹیلی فون کالز کے ذریعے ہمارے ہاتھ پاوں باندھنے کی کوششیں ہو رہی ہیں،نواز شریف نے سازش کرنے والوں کا نام لئے بغیر کہا کہ پس پردہ کاروائیاں نہ رکی تو ثبوت عوام کے سامنے لاوں گا، 4سال میں کیا کچھ ہوا کہانی عوام کے سامنے رکھوں گا اور یہ بھی بتاوں گا 4سالوں میں کیا ہوا اور کیا ہو رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ عوام کے ووٹ کا تقدس کیا جائے کیونکہ ملک کی تقدیر شفاف انتخابات سے جڑی ہے۔

اس قبل نواز شریف نے پریس کانفرنس کے آغاز میں امریکی صدر کے پاکستان پر لگائے الزامات کے جواب میں کہا کہ 17سال سے ایسی جنگ میں الجھیں ہوئے ہیں جو ہماری تھی ہی نہیں،نائن الیون کی سب سے بھاری قیمت بھی پاکستان نے چکائی،مگرعظیم جدو جہد اور قربانیوں کے باوجود ہمارا بیانیہ نہیں مانا جا رہا ۔نواز شریف نے مزید کہا کہ تین بار ملک کا وزیر اعظم رہا ہوں بہت سے حقائق سے واقف ہوں،ہمیں امداد اور خیرات کے طعنے نہ دیئےجائیں ، 2013میں حکومت سنبھالی تو دہشتگردی کے خاتمے کا عزم کیا اور ضرب عضب جیسا اہم آپریشن شروع کیا، مگرڈونلڈ ٹرمپ نے غیرسنجیدہ الزامات کے ذریعے عزت نفس پر حملہ کیا۔

مزید دیکھیں

متعلقہ مضامین