نا اہلی کے بعد پارٹی عہدہ بھی چھوڑ دیا

سپریم کورٹ سے نا اہلی فیصلے کے بعد جہانگیر ترین نے سیکرٹری جنرل تحریک انصاف کے عہدے سے بھی استعفیٰ دے دیا, ذرائع کے مطابق استعفی کا فیصلہ پارٹی سربراہ عمران خان سے ون آن ون ملاقات کے بعد کیا گیا! جہانگیر ترین نے اپنے استعفی میں لکھا کہ عمران خان کے ہمقدم ہو کر سخت احتساب کا سامنا کیا اور سرخرو ہوا, مگر تکنیکی بنیادوں پر انہیں نااہل کیا گیا! عدالتی فیصلے پر سرتسلیم خم کیا ہے جس کے بعد اخلاقی طور پر پارٹی عہدے پر رہنے کا کوئی جواز نہیں!جہانگیر ترین نے مزید لکھا کہ اپنی سیاسی زندگی اور پارٹی پر فخر ہے،

جبکہ عمران خان کی قیادت اور دوستی ان کا اثاثہ ہے جو مرتے دم تک برقرار رہے گی، انہوں نے پارٹی کارکنوں کی بے پناہ محبت اور حمایت کا بھی شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ہر اس ورکر کا مشکور ہوں جس کا اعتماد ان کے ساتھ رہا ،جہانگیر ترین نے عمران خان کیساتھ مل کر تحریک انصاف کو سب سے بڑی سیاسی قوت بنانے کے عزم کا اعادہ دہراتے ہوئے امید ظاہر کی کہ وہ عمران خان کو اگلا وزیراعظم دیکھیں گے! استعفی کے اختتام پر اپنے حلقے لودھراں کے عوام کاشکریہ ادا کرتے ہوئے جہانگیر ترین نے کہا کہ لودھراں کی عوام کا شکر گزار ہوں جنہوں نے مجھے اپنا لیڈر بننے کا اہل سمجھا،امید رکھتا ہوں عمران خان میرا استعفیٰ قبول کریں گے،

 

مزید دیکھیں

متعلقہ مضامین