ن لیگ کا پارٹی رہنماوں کے خلاف ایکشن

اسلام آباد (جاوید حسین) پاکستان مسلم لیگ (ن) نے میر ظفراللہ جمالی اور رضاحیات ہراج کے خلاف پارٹی قواعد کی خلاف ورزی پر کارروائی کا فیصلہ کرلیا۔نواز شریف کی زیر صدارت پنجاب ہاوس اسلام آباد میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کی سینٹرل ایگزیکٹیو کمیٹی کا اجلاس ہوا، جس میں وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی، وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف، مریم نواز، حمزہ شہباز، چوہدری نثار، خواجہ سعد رفیق، خواجہ آصف سمیت 25 ارکان نے شرکت کی۔اجلاس کے دوران پار رٹی رہنماوں کی جانب سے قومی اسمبلی میں پیش کئے گئے بل کے حق میں ووٹ نہ دینے پر رکن قومی اسمبلی میں میر ظفر اللہ جمالی اور رضا حیات ہراج کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا گیا۔مطالبہ کو تسلیم کرتے ہوئے دونوں رہنماوں کو پارٹی قواعد سے انحراف کرنے پر شوکاز نوٹسزبھیجنے کا فیصلہ کیا گیاہے۔واضح رہے کہ دونوں اراکین قومی اسمبلی نے ختم نبوت کے معاملے پر کی گئی تبدیلی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے آئینی بل کے دوران نواز شریف کو ووٹ نہیں دیا تھا۔دوسری جانب میر ظفر اللہ خان جمالی کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ نواز کسی کی ذاتی وراثت نہیں، نا اہل شخص کو ووٹ حاصل کرنے سے پہلے اپنی اہلیت ثابت کرنی ہو گی۔پارٹی کی طرف سے شو کاز نوٹس ملا تو بھرپور جواب دوں گا

مزید دیکھیں

متعلقہ مضامین